smartwatch-power -watch-matrix-industries

سانئس کی نئی ایجاد انسانی جسم کے درجہ حرارت سے سمارٹ واچ چارج


سمارٹ پاور واچ جو انسانی جسم کے درجہ حرارت سے منٹوں میں چارج ہو جائے

جتنے زیادہ فیچر سمارٹ واچ میں شامل کرتے جائیں۔اس کی بیڑی ٹائمنگ اتنی کم ہوتی جا ئے گی۔اسی وجہ سے بار بار چارج کرنا پھر انتطار کرنا۔اس مسئلے کا حل اور مشکل کو دور کرنے کے لیے ایسی سمارٹ واچ متعارف کروائی گئی ہے۔جسے باربار چارج کرنے ضرورت نہیں۔یعنی اس سمارٹ  کو واچ باندھنےکے بعد یہ انسانی جسم کے درجہ حرارت سے خودبخود چارج ہو جائے گی۔میڑکس  انڈسڑیز ایک کمپنیِ پاور واچ کے نام سے ایک نئی سمارٹ واچ بنا رہی ہے۔

smart-power-watch-matrix

 

اس  سمارٹ واچ کی  ٹیکنالوجی تو وہی ہے جو اسں کے چارجر میں متعارف کرواُئی گئی تھی۔لیکن یہ انسانی جسم کے درجہ حرارت سے چارج ہوتی ہے۔انسانی جسم کا درجہ حرارت  عام طور پر تقرِبیا 98ڈگری فارن ہاہیٹ ہوتا ہے۔سمارٹ واچ کے بیک کور پر موجود سنسر جِسم کی حرارت کو جذب کرتا ہے۔سمارٹ واچ کی ایک طرف مٹیل کا کراوُن ہوتا ہے جو ٹھنڈا ہوتا ہے۔انسانی جسم کا درجہ حرارت اور اس ٹھنڈے کروُان کی ٹھنڈک  کا فرق پاور جنرِیٹ کرتا ہے۔جب اس سمارٹ واچ کو اُتار دیا جاتا ہے تو یہ سلیپ یا کم پاور موڈ پر چلی جاتی ہے اور اندورنی بیٹری سے پاور لیتی ہے تاکہ جب صارف اسے دوبارہ پہنے تو اسے ٹائم سیٹ نہ کرنا پڑے۔ورزش کرتے یا تیز بھاگتے انسانی جسم گرم ہو جاتا ہے ۔اس لیے اس وقت پاور واچ جلدی چارج ہو جاتی ہے۔اس سمارٹ پاور واچ کی ایک خصوصیت یہ ہے کہ اسےبلو ٹوتھ کے ساتھ سمارٹ  فون سے مربوط  کیا جاسکتا ہے۔ پاور واچ کے لیے ابھی انڈ یگو گو پر فنڈریزنگ مہم شروع ہو چکی ہے۔ جہاں صارفین اسے170 ڈالر میں پری  آرڈر کر سکتے ہیں۔سمارٹ پاور واچ کی فراہمی اگلے سال جولائی میں کی جائے گی۔

smart-power-watch-matrix

 

ذرائع  :

http://money.cnn.com/2016/11/14/technology/body-heat-smartwatch-matrix-battery-power/