Amazing-scientific-plant-detects-explosive-material-bom-pollution

حیرت انگیز پوداجو دھماکہ خیز مواد کو فوراً پہچان لے


 ماحول میں موجود آلودگی اور آس پاس موجود کسی بھی دھماکہ خیز مواد  کا ایک حیاتیاتی  پودے کی مدد سے پتا لگایا جا سکتاہے- حیاتیات علم کی وہ برانچ ہے جس میں زندہ چیزوں کا مطالعہ کیا جاتا ہے-

سائنس کا  ایک  اورحیرت انگیز کرشمہ جو زندگیاں بچانے میں بہت مدد گار ثابت ہوگا- علم حیاتیات کی مدد سےبننے والے حیاتیاتی پودوں کے پتوں میں موجود انرجی بنانے والی فیکٹریوں (کلوروپلاسٹ) میں چھوٹی چھوٹی ساختیں جڑوں کے ذریعے ڈال دی جاتی ہیں, جو کہ کاربن کی نینوٹیوبزکہلاتی ہیں- جنہیں  ہم نینوسینسرز بھی کہتے ہیں-  محقیقین نے انہیں ایک نئے طریقے لِیپ

(lipid Exchange Envelope Penetration, or  LEEP لپڈ ایکسچینج لفافے دخول) کی مدد سے داخل کیا-

کاربن کی نینو ٹیوبز مصنوعی انٹینا کی طرح برتاوَ کرتی ہیں, ان کی رینج انفرا ریڈ لائٹ جتنی ہوتی ہے-

جو پودے کی روشنی جذب کرنے کی طاقت کو مزید 30فیصد تک بڑھا دیتی ہیں – جن کی مدد سے یہ پودے وائرلیس آلات  جیسے کہ موبائل اور لیپ ٹاپ وغیرہ کے ساتھ لنک کر سکتے ہیں ,اور یہ ان وائرلیس آلات کی معلومات کو استعمال کر تے ہو ئے بڑی تیز رفتاری سے دھماکہ خیز مواد اور ماحول میں موجود  آلودگی کی شرح کا با آسانی  پتا لگا سکتے ہیں- اور  اس طرح  یہ ہمیں محفوظ رہنے اور وقت پر حفاظتی  اقدامات کرنے میں مدد دیتے ہیں۔
ماشسٹس انسٹیٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ( کیمبرج، میساچوسٹس کی ایک  نجی تحقیقی یونیورسٹی) کےایک کیمیکل انجینئر سٹینو کا کہنا ہے کہ یہ پودے ہر طرح کے ماحول جیسے کہ کم اور زیادہ پانی اور روشنی والے  ماحول میں با آسانی  زندہ رہ  سکتے ہیں-

محققین نےاس کا نتیجہ دیکھنے کے لئے کہ کاربن نینو ٹیوبز سینسرز ان پودوں میں کیسے کام کرتے ہیں، انفراریڈ مائیکروسکوپ کااستعمال کیا ہے۔


متعلق ثناء فراز

مزیددیکھیں

whatsapp

واٹس ایپ کے انٹرفیس میں اچانک نئی تبدیلی

واٹس ایپ نے اپنی نئی اپ ڈیٹ میں انٹرفیس کو تبدیل کیا ہے جن میں …

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.